پايگاه اطلاع رساني دفتر آيت الله العظمي شاهرودي دام ظله
ArticleID PicAddress Subject Date
{ArticleID}
{Header}
{Subject}

{Comment}

 {StringDate}
Tuesday 22 October 2019 - الثلاثاء 21 صفر 1441 - سه شنبه 30 7 1398
 
 
 
 
  • روزے کا کفّارہ  
  • 2010-01-10 18:49:50  
  • CountVisit : 246   
  • Sendtofriend
  •  
  •  
  • مسئلہ٣٥٤:جس شخص پر ماہ رمضان کے روزے کا کفارہ واجب ہو تو اس کو ایک غلام آزاد کرنا چاہیۓ یا اس حکم پر جو بعد کے مسئلہ میں بیان کیا جاۓ گا دو مہینے روزے رکھے یا ساٹھ فقیروں کو کھانا کھلاۓ یا ان میں سے ہر ایک کو تین پاؤ کھانا دے یا کوئ جنس دے جیسے گیہوں،جو وغیرہ اور اگر یہ مذکورہ اشیاء نہیں دے سکتا ہو تو جس قدر ہو سکے فقیر کو کھانا دے اور اگر یہ بھی نہیں دے سکتا ہو تو روزہ رکھے اور اسکو استغفار کرنا چاہیۓ اگر چہ ایک مرتبہ استغفراﷲ کہے بلکہ احتیاط واجب یہ ہے کہ جب بھی ہو سکتا ہو کفارہ ادا کرے۔

    مسئلہ٣٥٥:جو شخص ماہ رمضان کے کفارے کے دو مہینوں کے روزے رکھنا چاہے تو اسے چاہیۓ کہ اکتیس/٣١دن برابر روزے رکھے ۔اور اگر باقی روزے پے در پے نہ رکھ سکتا ہو تو کوئ اشکال نہیں۔

    مسئلہ٣٥٦:اگر روزہ دار ماہ رمضان میں ایک دن میں چند مرتبہ جماع کرے تو ایک کفّارہ اس پر واجب ہے لیکن اگر اس کا جماع کرنا حرام ہو تو ہر مرتبہ کے لۓ اس پر کفّارہ ٔ جماع واجب ہو گا۔

    مسئلہ٣٥٧:جو شخص وقت کو تشخیص دے سکتا ہو اگر کسی کے کہنے کے مطابق کہ مغرب ہو گئ ہے اپنے روزے کو افطار کرے اور بعد میں معلوم ہو کہ مغرب نہیں ہوئ تھی اس پر قضاء اور کفّارہ واجب ہے۔

    وہ مقامات جہاں صرف روزے کی قضاء واجب ہے

    مسئلہ٣٥٨:چند صورتوں میں فقط انسان پر روزے کی قضاء واجب ہے اور کفّارہ واجب نہیں ہے۔

    ١.یہ کہ روزہ دار ماہ رمضان کے دن میں جان کر قے کرے۔

    ٢.ماہ رمضان کی شب میں مجنب ہو اور گذشتہ مسئلہ کی تفسیر کی بنا پر صبح کی آذان تک دوسری نیند سے بیدار نہ ہو۔

    ٣.جو عمل روزہ کو باطل کرتا ہے اسکو انجام نہ دے لیکن روزے کی نیّت نہ کرے یا ریا اور دکھاوا کرے یا قصد کرے کہ روزہ سے نہ ہو یا یہ قصد کرے کہ جو کام روزے کو باطل کرتا ہے اس کو انجام دے۔

    ٤.یہ کہ ماہ رمضان میں غسل جنابت کو بھول جاۓ اور جنابت کی حالت میں ایک یا چند دن روزے رکھے۔

    ٥.یہ کہ ماہ رمضان میں تحقیق کیے بغیر کہ صبح ہوگئ ہے یا نہیں کوئ ایسا کام انجام دے جو روزہ کو باطل کرتا ہے اس کے بعد معلوم ہوکہ صبح ہو گئ تھی اور نیز تحقیق کے بعد گمان رکھتا ہو کہ صبح ہو گئ ہے تو کوئ ایسا کام انجام دے جو روزے کو باطل کرتا ہو اور اس کے بعد یہ معلوم ہو جاۓ کہ صبح ہو گئ تھی تو اس شخص پر اس روزہ کہ قضاء واجب ہے۔

    ٦.یہ کہ اپنے جسم کو ٹھنڈا کرنے کے لۓ یا بلا وجہ کلّی کرے اور اس کو بے اختیار نگل جاۓ لیکن اگر بھول جاۓ کہ روزہ ہے اور پانی کو نگل جاۓ یا واجب نماز کے لۓ کلّی کرے اور اس کو بے اختیار نگل جاۓ تو اس پر قضاء واجب نہیں ہے۔

     
     
     
     
     

    The Al-ul-Mortaza Religious Communication Center, Opposite of Holy Shrine, Qom, IRAN
    Phone: 0098 251 7730490 - 7744327 , Fax: 0098 251 7741170
    Contact Us : info @ shahroudi.net
    Copyright : 2000 - 2011