پايگاه اطلاع رساني دفتر آيت الله العظمي شاهرودي دام ظله
ArticleID PicAddress Subject Date
{ArticleID}
{Header}
{Subject}

{Comment}

 {StringDate}
Saturday 17 November 2018 - السبت 07 ربيع الأول 1440 - شنبه 26 8 1397
 
 
 
 
  • رہن کے احکام  
  • 2010-01-12 16:57:40  
  • CountVisit : 217   
  • Sendtofriend
  •  
  •  
  • مسئلہ٤٤٤:رہن یہ ہے کہ مقروض ایسے مال کی ایک مقدار کو طلبگار کے پاس رکھے کہ اگر وہ اس کے مطالبے کو نہ دے تو وہ اپنے مطالبے کو اس مال سے حاصل کرے۔

    مسئلہ٤٤٥:رہن دینے والا اور وہ شخص جو مال کو رہن لیتا ہے ان کو مکلف اور عاقل ہونا چاہیۓ اورکوئ انہیں مجبور نہ کرے نیز وہ بیوقوف بھی نہ ہوں یعنی اپنے مال کو بیہودہ کاموں میں صرف نہ کریں۔

    مسئلہ٤٤٦:اس چیز کا فائدہ کہ جس کو رہن رکھتے ہیں اس شخص کا مال ہے جس نے اس کو رہن رکھا ہے۔

    مسئلہ٤٤٧:اگر مقروض اپنے مسکونہ مکان کے علاوہ اور اسکے اسباب کے علاوہ کوئ چیز نہ رکھتا ہو تو طلبگار اس سے مطالبہ نہیں کر سکتا لیکن اگر وہ کسی مال کو رہن رکھے جس میں اس کا گھر اور اس کا اسباب بھی ہو تو طلبگار اس کو فروخت کرکے اپنے مال کو لے سکتا ہے۔

     
     
  • RelatedArticle
  •  
    نام :
    Lastname :
    E-Mail :
     
    OpinionText :
    AvrRate :
    %0
    CountRate :
    0
    Rating :
     
     
     
     

    The Al-ul-Mortaza Religious Communication Center, Opposite of Holy Shrine, Qom, IRAN
    Phone: 0098 251 7730490 - 7744327 , Fax: 0098 251 7741170
    Contact Us : info @ shahroudi.net
    Copyright : 2000 - 2011